بس اک داغِ ندامت ناول از عمیرہ احمد 338

بس اک داغِ ندامت ناول از عمیرہ احمد

اردو ناول “بس اک داغِ ندامت” تحریر عمیرہ احمد

بس اک داغِ ندامت، بدلہ ، عصمت دری ، پچھتاوے، توبہ اور احساس کی ایک قابل ذکر کہانی ہے. یہ ایک لاپروا لڑکی “مومل” کی کہانی ہے جس نے اپنے غیر معقول رویے سے اپنی ہی زندگی برباد کر دی۔ کہا نی سے ہمیں یہ سبق ملتا ہے کہ غیر ذمہ دارانہ برتاؤ اور لاپرواہانہ رویہ پلک جھپکتے زندگیوں کو توڑ سکتا ہے ، خاص طور پر اگر آپ عورت ہیں۔
اگرچہ کہانی بہت عام اور روایتی ہے پھر بھی یہ ایک مضبوط پیغام دیتی ہے۔ ۔ عمیرہ نے ہر ممکن طریقے سے لوگوں کی خود غرضی کو ظاہر کیاہے۔ یہ ایک بہترین اختساب ہے کہ ہم بار بار غلطیاں کرنے کے باوجود اپنے آپ کو کس طرح آسانی سے معاف کر دیتے ہیں لیکن ہم دوسروں کو ان کی چھوٹی چھوٹی غلطیوں کے لیے بھی معاف کرنے میں ناکام رہتے ہیں۔ یہ ناول سب سے پہلے شعاع ڈائجسٹ میں شائع ہوا ، اب یہ تین کہانیوں کے مجموعے حسنہ اور حسین آرا کا حصہ ہے۔
عمیرہ احمد اس دور کے سب سے زیادہ پڑھے جانے والے اور مشہور اردو افسانہ نگار اور اسکرین پلے مصنفہ ہیں۔ عمیرہ پاکستان کے شہر سیالکوٹ میں ۱۰ دسمبر ۱۹۷۶ کو پیدا ہوئیں۔ اس نے مرے کالج ، سیالکوٹ سے انگریزی ادب میں ماسٹرز کی ڈگری حاصل کی اور بعد میں وہ آرمی پبلک کالج ، سیالکوٹ میں اے اور او لیول کے طلباء کے لیے انگریزی زبان کی لیکچرر بن گئیں۔ تاہم ، اس نے کچھ سال بعد نوکری چھوڑ دی تاکہ اپنی پوری توجہ لکھنے پر دے۔
عمیرہ احمد نے اپنے ادبی سفر کا آغاز خواتین کے ماہناموں سے کیا اور پھر ٹی وی انڈسٹری میں اپنا نام بنانے لگیں۔ آپ کے لکھے گئے کئی ناولوں پر ڈرامے بھی بنائے جاچکے ہیں۔آپ کے ناول ہر عمر کے انسان پڑھتے ہیں اور عمیرہ احمد کے ڈرامے تمام عمر کے لوگوں کے درمیان مقبول ہوتے ہیں۔ عمیرہ احمد کا لکھا گیا ناول ‘‘الف‘‘ آج کل مقبولِ عام ہے۔

عمیرہ احمد نے بہت سے ناول لکھے ہیں لیکن ان کا ناول ”پیرِ کامل“ ان کی شہرت کی وجہ بنا۔ ”پیر کامل“ عمیرہ احمد کا سب سے زیادہ پڑھے جانے والے ناول میں شمار کیا جاتا ہے۔ اس ناول کا انگریزی ترجمہ بھی کیا جا چکا ہے جس کا نام ”The Perfect Mentor ” ہے۔

یہاں سے ڈاؤنلوڈ کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں