پیار کا پہلا شہر ناول از مستنصر حسین تارڑ 337

پیار کا پہلا شہر ناول از مستنصر حسین تارڑ

اردو رومانوی ناول “پیار کا پہلا شہر” تحریر از مستنصرحسین تارڑ

“پیار کا پہلا شہر”سفرنامہ کی طرز پر لکھا گیا ایک حقیقی شاہکار رومانوی ناول ہے۔ یہ خالص اور پاکیزہ محبت کی کہانی ہے۔ یہ ایک پاکستانی سیاح “سنان” کی کہانی ہے، جو فرانس جاتے ہوئے ایک معذور (لنگڑی) لیکن خوبصورت فرانسیسی نوجوان خاتون “پاسکل” سے ملتا ہے۔ اُسے لگتا ہے کہ پاسکل صحیح طریقے سے چلنے پھرنے سے معذور ہونے کی وجہ سے احساس کمتری کا شکار ہے۔ سنان نے فیصلہ کیا کہ وہ پاسکل کے ساتھ کچھ وقت گزارے اور دوبارہ معمول کی زندگی میں واپس آنے میں اس کی مدد کرے۔ وہ کچھ وقت ایک ساتھ گزارتے ہیں اور جلد ہی دونوں کو احساس ہوتا ہے کہ وہ ایک دوسرے کے ساتھ گہری محبت کرتے ہیں۔ سچی محبت حاصل کرنے پر پاسکل سنان کے لیے اپنا سب کچھ قربان کرنے کو تیار ہو جاتی ہے اور اب سنان کو ثقافتی اور سماجی مجبوریوں کی وجہ سے فیصلہ کرنے کی ضرورت ہے۔ یہ جاننے کے لیے کہ آیا سنان نے پاسکل سے شادی کی ہے یا نہیں، ناول پڑھیں اور لطف اندوز ہوں۔
مصنف نے اس ناول کے ذریعے دو نکات بیان کرنے کی کوشش کی ہے۔ ایک یہ کہ کوئی بھی، کسی بھی وقت محبت میں مبتلا سکتا ہے کیونکہ محبت پر کسی زور نہیں چلتا، بلکہ ہر کوئی اپنی زندگی میں ایک یا کئی بار پیار کرتا ہے۔ محبت بس ہوجاتی ہے اوریہ کوئی سرحد، ملک، قومیت وغیرہ نہیں دیکھتا۔ محبت نے خود کو کبھی بھی خوبصورت یا جسمانی طور پر فٹ لوگوں کے لیے مخصوص نہیں کیا ہے. دوسرا نکتہ جو مصنف نے بیان کرنے کی کوشش کی ہے وہ یہ ہےکہ آج کی دنیا میں، ہم معذور شخص کو “ایک ایسا شخص جو جسمانی یا ذہنی طور پر ناکارہ ہے” کے طور پر بیان کرتے ہیں، جب کہ مصنف کے نقطہ نظر میں ہر کوئی زندگی کے کسی نہ کسی موڑ پر معذور ہو جاتے ہیں۔ ہم سب زندگی کو اپنے انداز میں ڈھالنا چاہتے ہیں لیکن زیادہ تر وقت کی رکاوٹیں جیسے ثقافت، غربت، بھوک، خاندان، تعلیم، نوکری وغیرہ ہمیں معذور بنا دیتی ہیں اور ہم سخت اور ناپسندیدہ فیصلے کرنے پر مجبور ہوتے ہیں۔
مستنصر حسین تارڑ نے نہ صرف ناول کے کرداروں کے جذبات کو اپنے جادوئی الفاظ سے بیان کیا بلکہ اس ناول کو پڑھتے ہوئے پیرس کے کچھ مشہور مقامات کی تاریخ اور تفصیل سے بھی لطف اٹھایا جا سکتا ہے۔ میں اردو ادب کے تمام قارئین سے اس ناول کو پڑھنے کی پرزور سفارش کرتا ہوں۔

یہاں سے ڈاؤنلوڈ کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں